• جو فکر وصل ہوتی ہے چاہت میں جا بہ جا
    اُس بیقرار نے بھی کیا سب وہ ٹھک ٹھکا
    نظیر
  • ہر جنم میں اسی کی چاہت تھے
    ہم کسی اور کی امانت تھے
    بشیر بدر
  • نگوڑی چاہت کو کیوں سمیٹا عبث کی جھک جھوری جھیلنے کو
    دو گانا پڑ جائے پٹکی ایسی تمہارے اٹھکیل کھیلنے کو
    انشا
  • تو جانتا نہیں مری چاہت عجیب ہے
    مجھ کو منا رہا ہے، کبھی خود خفا بھی ہو
    بشیر بدر
  • اس کی چاہت کی چاندنی ہوگی
    خوب صورت سی زندگی ہوگی
    بشیر بدر
  • تم سے راسخ اٹھ سکیں گے صدمے چاہت کے کہاں
    ڈوبتا ہے جی ہمارا نام سن کر چاہ کا
    راسخ
First Previous
1 2 3 4
Next Last
Page 1 of 4

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter