Shair

شعر

پینگا بندھو پینگو خوں ماں میرا پیچھا ٹک چھوڑ دیو
گھر کا دھنی ہے گھر منے پنگار ڈولارا کاہیکوں

(ہاشمی)

صبر کی سل غم اولاد میں دل پر دھر لوں
کیسے ماں ہو کے بھلا چھاتی کو پتھر کرلوں

(شمیم)

آنکھیں بچھائیں ماں نے جو تم گھٹینوں چلے
تلووں سے اس نے دیدہ حق میں سدا ملے

(انیس)

کیا ماں کے پاس بیٹھے ہو مسرور و مطمئن
آواز لگ رہی ہے وہ ہل من مبارز

(اکبرآبادی)

موہے چھو کر فیض ملا کرتا زحال اشراقیین مکن تغافل جیوں نہ ملا اکتساب کباتاں ماں

(امیر خسرو)

کہ ماں باپ ہور یک بڑے بھائی سوں
چھپاتے ، نہیں بات کوئی دائی سوں

(قطب مشتری)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 14

Poetry

Pinterest Share