Shair

شعر

مژدہ عید سے ہے گلشن عالم میں بہار
نغمہ عیش سے ہے بزم جہاں میں رونق

(انیس)

حضرت علی مولود تھے سب مومناں کا عید ہے
یاراں خوشیاں گھر گھر کرواے دوستاں کا عید ہے

(قلی قطب شاہ)

بغری از عید مت دکھلا کسی کوں یہ ہلال ابرو
نہ مل مہتاب میں بھی کس سوں اے چندر بدن ہر گز

(ولی)

عید آئندہ تک رہے گا گلا
ہو چکی عید تو گلے نہ ملا

(میر)

ہلالِ عید کو دیکھو‘ تو روک لو آنسو
جو ہوسکے تو محبت کا احترام کرو

(نامعلوم)

سحر عید خجل جس سے ہو اے ماہ لقا
وصل کی پھولی ہے یہ شام ترے آنے سے

(جرات)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 28

Poetry

Pinterest Share