• آیا ہے ابر جب کا قبلہ سے تیرہ تیرہ
    مستی کے ذوق میں ہیں آنکھیں بہت ہی خیرہ
    میر
  • رو رو کے ان کی یاد میں آنکھیں کروں سفید
    بس یوں ہی صبح ہوگی پب انتظار کی
    الماس درخشاں
  • دیکھکر صورت سحر اس مہر پر تنویر کی
    رہ گئیں آنکھیں کھل آئینہ تصویر کی
    نکہت
  • آنکھیں گئیں حال اپنا دکھا یا نہ گیا
    رخصت ہوئے درد و غم جو کھایا نہ گیا
    رشید(پیارے صاحب)
  • رشک مہ بن ہے یہ اندھیر کہ مجھ پر تارے
    دمبدم آنکھیں نکالے ہیں شب تار سے مل
    نصیر
  • شکست دل نے رلوایا یہاں تک
    کہ آنکھیں روتے روتے ٹوٹ آئیں
    محشر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter