Shair

شعر

دانہ پانی اس کو نہ بھائے
رین بسیرے نیند نہ آئے

(سودا)

اب شورِ حشر مجھ کو جگائے تو غم نہیں
میں سو لیا لحد میں میری نیند بھر گئی

(بیدم ‌وارثی)

جو دل رہ انہ چین سے تو ان کی نیند اچٹ گئی
میرے قریب ساری رات آنکھوں ہی میں کٹ گئی

(شوق قدوائی)

دیکھا کچھ اس طرح سے کسی خوش نگاہ نے
رخصت ہوا تو ساتھ ہی لیتا گیا وہ، نیند

(امجداسلام امجد)

جب سے آنکھیں لگی ہیں ہماری نیند نہیں آتی ہے رات
تکتے راہ رہے ہیں دن کو آنکھوں میں جاتی ہے رات

(میر)

دیکھا کچھ اِس طرح سے کسی خُوش نگاہ نے
رُخصت ہُوا تو ساتھ ہی لیتا گیا وہ ‘ نیند

(امجد اسلام امجد)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Poetry

Pinterest Share