• محبت نے کام اپنا پورا کیا
    کہ ان دونوں لعلوں کو چورا کیا
    میر
  • اسے کسی کی محبت کا اعتبار نہیں
    اسے زمانے نے شاید بہت ستایا ہے
    بشیر بدر
  • چاک جب دست محبت نے کیا دامان میم
    حسن مخفی سے نگاہوں کو شناسائی ہوئی
    اقبال
  • کھیل لڑکوں کا سمجھتے تھے محبت کے تئیں
    ہے بڑا حیف ہمیں اپنی بھی نادانی کا
    میر
  • دن رات میری چھاتی جلتی ہے محبت میں
    کیا اور نہ تھی جاگہ یہ آگ جو یاں دابی
    میر
  • قدم دشتِ محبت میں نہ رکھ میر
    کہ سر جاتا ہے گام اوّلیں پر
    میر تقی میر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 71

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter