• لب اس کے دیکھو تو ہے ظلم و خوں خوری کی دلیل
    سیہ مسی پہ نہیں سرخ پان کی تحریر
    اظفری
  • کیا چمن کی گل زمیں میں ظلم ہوتا ہے یقیں
    خار کو گلبدن کا دامن گیر کرتی ہے بہار
    یقین
  • جتنا ظلم وہ دل ڈھاتا ہے
    جو بد مسلک ہوجاتا ہے
    دھم پد
  • اُس ظلم پیشہ کی یہ رسم قدیم ہے گی
    غیروں پہ مہربانی یاروں سے کینہ جوئی
    میر تقی میر
  • کبھی رہے گا نہ گنجینہ ظلم کیشوں کا
    لگے گی آگ قرابین کے خزانے میں
    ریاض البحر
  • ظلم اعداد نے کیا جب سے تمہیں گوشہ نشیں
    چاند سورج کو ہے گردوں پہ اسی دن سے گہن
    اسیر( مظفر علی)
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter