• دل بھی کیسی شے ہے دیکھو پھر خالی کا خالی
    گرچہ اس میں ڈآلے میں نے آنکھیں بھر بھر خواب
    سعد ‌اللہ ‌شاہ
  • آنکھیں گئیں حال اپنا دکھا یا نہ گیا
    رخصت ہوئے درد و غم جو کھایا نہ گیا
    رشید(پیارے صاحب)
  • چار سو دیکھوں ہوں جوں آئنہ آنکھیں پھاڑ پھاڑ
    میری نظروں سے جو اوجھل وہ پری وش ہے مرا
    جرأت
  • نرگس کو تب سے ہرگز دیکھا نہیں ہوں پیارے
    گلشن میں جب سے تونے آنکھیں بتائیاں ہیں
    عشق
  • کسی غنچہ کو چھوا اور نہ کوئی گل توڑا
    گھورتی کیوں ہے مجھے آنکھیں نکالے بلبل
    دیوان رند
  • بچھوے پس کٹاری پس سناں ہیں تری آنکھیں
    کیا دست فروشی کی دکاں ہیں تری آنکھیں
    شعور
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter