• یہ اوروں سے آنکھیں لڑانے ہیں آپ
    ہمیں دیکھ کر منہ چھپا تے ہیں آپ
    معروف
  • گریوں ہی ہے تو واں نہ بولینگے
    اپنی آنکھیں کوئی سیے کیسے
    نظام
  • کس نے وقت نزع کہہ دیں گور کی دلچسپیاں
    جارہیں آنکھیں گڑھے میں پہلے مجھ پیمار سے
    تسلیم
  • دیکھیں ہیں راہ کس کی یارب کہ اختروں کی
    رہتی ہیں باز آنکھیں چندیں ہزار ہر شب
    میر
  • سرد مہری ہوچکی بیٹھو گھڑی بھرروبرو
    ہم بھی آنکھیں گرم کرلیں آٹش رخسار سے
    تسلیم
  • ماں کی آنکھیں چراغ تھیں جس میں
    میرے ہمراہ وہ دعا بھی تھی
    امجد اسلام امجد
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter