Shair

شعر

تج دشٹ کی تاثیر تھے مردے سو سر تھے جی اٹھے
کانٹے سوکیاں پر دھر نظر تا ہوسے گلستان عید کا

(قلی قطب شاہ)

تمہیں تو عید ہے دن اور شب برات رات
ہم اپنی آہ کے یاں داغتے ہیں چہکے آپ

(محب)

صفراویوں کو ہو جو ضرر عہد پاک میں
کہلائے میٹھی عید نہ پھر ایک بار عید

(منیر)

عید ہر روز مناتے نہ بگڑتا جو فلک
ایکی روزے سے ہیںماہ رمضان میں ہم تم

(رشک)

خوشیاں سوں آج جاں تاں سب جہاں معمور دستا ہے
نبی کی عید سوری کی کلا میں نور دستا ہے

(قلی قطب شاہ)

کیا عید میں بھی گھر کو پلٹ کر نہ آؤگے
ہے ہے مجھے برس کے برس دِن رلاؤگے

(شمیم)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 28

Poetry

Pinterest Share