Shair

شعر

جب مورخ ناکرے تاریخ منج مجلس کے تائیں (کذا)
قصہ خواں کیوں پڑ سکیں سو قصہ پایاں عید کا

(قلی قطب شاہ)

سنبل تمہارے گیسوؤں کے غم میں لٹ گیا
ابرو کی تیغ دیکھ مد عید کٹ گیا

(میر)

میری نگہ کی رہ پہ اے فرخندہ فال چل
ہے رز عید آج اے ابرو ہلال چل

(ولی)

حاتم کی بخشش چھپ گیا ہے تیری بخشش کے انگے
گنجاں گھرے گھر بھر دیا ہے آج دوراں عید کا

(قلی قطب شاہ)

رشک کرتے ہیں ملک ہور حور حیرت بزم تھے
اب پلونچ کن پساریں ہور منگیں یاں عید کا

(قلی قطب شاہ)

شب برات کی وہ روشنی کہ صل علیٰ
ہو روز عید اگر آئے سامنے شب تار

(ذوق)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 28

Poetry

Pinterest Share