Shair

شعر

نظر دورتے ایک عورت پہ پڑی
چادر اوڑ سر پاؤں لک آکھڑی

(کبیر)

نہ رہ سک وو عورت اپس شرم چھوڑ
پڑی فسق کے کام میں گھر کوں پھوڑ

(غواصی)

یو اس چوری کی عورت ہے اندھاری رات نڑوے پر
چھنالا کرنے جاتی ہے ندی کے پار چوری سوں

(ہاشمی)

غصہ عورت میں نا اچھنا غصے سوں ناندے نا جاتا
کتی ہے خرخشہ جیو کوں ہوی سر گرداں چپ رس رس

(ہاشمی)

کیا اپنی اجائے آن نے سوال
کہ ہیں مرد پرچار عورت حلال

(قائم)

دلدل جو ہو رہی ہے ہر اک جا پہ رسمسی
مر مر اٹھا ہے مرد تو عورت رہی پھنسی

(نظیر)

First Previous
1 2 3 4 5
Next Last
Page 1 of 5

Poetry

Pinterest Share