Shair

شعر

دلدل جو ہو رہی ہے ہر اک جا پہ رسمسی
مر مر اٹھا ہے مرد تو عورت رہی پھنسی

(نظیر)

قباحت سوں آزاد دے بے شمار
وہیں گھر تے عورت کوں بھایا بہار

(غواصی)

پڑی ایسی دی ہےچنچل ہور چٹور
نے ڈرہے وہ عورت جنم کی دھنڈور

(ہاشمی)

پڑی ایسی دی ہے چنچل ہور چٹور
نے ڈر ہے وہ عورت جنم کی دھنڈور

(یوسف زلیخا)

غصہ عورت میں نا اچھنا غصے سوں ناندے نا جاتا
کتی ہے خرحشہ جیو کوں ہوی سرگرداں چپ رُس رُس

(ہاشمی)

بڑی ہے شوخڑی عورت پوچھے نت ہاشمی کاں ہیں
بی بیاں میں ناؤں لے موں بھر اجڑ گئی کوں ہوا کیا خوں

(ہاشمی)

First Previous
1 2 3 4 5
Next Last
Page 1 of 5

Poetry

Pinterest Share