Shair

شعر

جلوہ حسن ہے شعاعوں میں
یہ بھی جالی نقاب کی سی ہے

(بے نظیر)

سر فرازی اسی گردن کو بہت زیبا ہے
آتش حسن گلو سوز کا یہ شعلہ ہے

(محسن)

صدر بزم ناز کیا تھا ایک بام حسن تھا
جلوہ گر جس بام پر قایم مقام حسن تھا

(نقوش مانی)

یہی روپ لبدائیا ہے مجے
یہی حسن بے سدھ کیا ہے مجے

(سیف الملوک و بدیع الجمال)

اللہ رے آئینے میں ترے حسن کا شکوہ
پانی میں ماہتاب کی جیسے جھلک پڑے

(قائم)

وہ با وفا کہ اہل وفا جن کو دیں خراج
ایسے حسیں کہ حسن میں یوسف سے لیں وہ باج

(دبیر)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 81

Poetry

Pinterest Share