Word of the dayآج کا لفظ

Martello

کنج انزدا

MEANS: ملک کی حفاظت کے لئے ساحلی قلعہ بندی

معنی: گوشہِ تنہائی

Listen to Urdu Pronunciationالفاظ کے تلفظ سنئیے

Couplet of the day

آج کا شعر

Click on the below image to open up the complete image gallery. مکمل گیلری کو دیکھنے کے لئے نیچے دی گئی تصویر پر کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia

اردو انسائیکلوپیڈیا

ناصر کاظمی

Description

تفصیل

اگر کوئی مجھ سے پوچھے کہ اردو شاعری میں دوسرا میر تقی میرؔ کون ہے تو میرا جواب ہوگا ’’ سید ناصر رضا ناصر ؔ کاظمی!‘‘ ناصر بلا شبہ ’’میرِ ثانی ‘‘ ہیں ۔آپ نے اپنی شاعری میں وہ خیالات و رجحانات پیش کیے جسے میرؔ نے تشنہ رہنے دیا تھا۔میرؔ ’’ خدائے سخن‘‘ ہیں تو ناصرؔ ’’ناخدائے سخن ‘‘ ہیں ۔پاکستان ہجرت کرنے کے بعد ناصرؔ نے میر تقی میر ؔ پر بہت تحقیقی کام کیا ، میرؔ کی شاعری کو یکجا کیا۔اُن کے لکھنؤ کے مطبوعہ دیوان کی تشریحات لکھیں ۔وہ میرؔ کے نبض شناس ہیں ۔یہ وجہ ہے کہ میرؔ جیسا درد و غم اور رنج و الم اُن کی شاعری کا بھی موضوع بنا ۔ ناصر کاظمی 8 دسمبر 1925ء کو انبالہ (بھارت) میں پیدا ہوئے اور 2 مارچ 1972ء کو سرطان کے عارضے مٰں مبتلا رہ کر لاہور میں انتقال کیا ۔جدید اردو کے نمایاں ترین شاعر ۔شاید ہی کوئی ایسا پاکستانی یا بھارتی گلوکار ہو جس نے ناصر کی غزلیں نہ گائی ہوں ۔جو میرے ذہن میں ہیں ،اُن کا مختصراً تعارف پیش کرتا ہوں : یہ کیسا بندھن ہے ، ساجن یہ کیسی مجبوری ، گلوکارہ مہناز پھر ساون رُت کی پون چلی ، تم یاد آئے ، نیرہ نور دل دھڑکنے کا سبب یاد آیا ، ملکہ ترنم نور جہاں غم ہے یا خوشی ہے تو میری زندگی ہے تُو ، نصرت فتح علی خان نئے کپڑے بدل کر جاؤں کہاں اور بال بناؤں کس کے لیے ، خلیل حیدر تیری زلفوں کے بکھرنے کا سبب ہے کوئی ، محمد رفیع(بھارت) دل میں اِک لہر سی اُٹھی ہے ابھی ،کوئی تازہ ہوا چلی ہے ابھی ، تصور خانم اوراستاد غلام علی جرمِ انکار کی سزا ہی دیجے ، آشا بھوسلے (بھارت) جب رات گئے تیری یاد آئی ، نور جہاں تیرے آنے کا دھوکا سا رہا ہے ،استاد امانت علی رنگ برسات نے بھرے کچھ تو ،رجب علی کرتا اسے بے قرار کچھ دیر ، جگجیت سنگھ وہ دل نواز ہے لیکن نظر شناس نھیں ، چترا سنگھ نیتِ شوق بھر نہ جائے کہیں ، تُو بھی دل سے اُتر نہ جائے کہیں ، ملکہ ترنم نور جہاں ناصر کے والدین سید محمد سلطان اور والدہ کنیزہ محمدی نے آپ کی تعلیم پر خاص توجہ دی اور ناصر نے انبالہ ، شملہ اور لاہور میں اعلیٰ تعلیم حاصل کی ۔ادبی رجحانات کی وجہ سے 1952ء میں اُس وقت کے معروف ادبی پرچے ’’ ہمایوں‘‘ کے چیف ایڈیٹر بھی ہوئے اس کے بعد ناصر کاظمی ریڈیو پاکستان ، لاہور سے وابستہ ہوگئے۔ناصر چونکہ قیامِ پاکستان کے فوراً بعد 1947ء میں لاہور آگئے تھے لہٰذا فکرِ معاش بھی دامن گیر رہا۔ناصر ؔ نے ۱۹۴۰ء میں اختر شیرانی کی غزلوں سے متاثر ہو کر شاعری شروع کردی ، ابتدا میں میر تقی میرؔ کا انداز غالب رہا لیکن پھر غزل کے لوازمات کو بھی خوبی سے بیان کیا۔اس دوران ناصر ؔ نے رومانی نظمیں اور سانٹ بھی کہے ۔اس کے بعد غزلیں کہیں اور معروف شاعر حفیظ ہوشیار پوری سے اصلاح لی ۔لیکن جیسا کہ ہم نے ابتدا میں عرض کی کہ ناصرؔ کی شاعری میں میرؔ تقی والی’’احساسِ محرومی‘‘ پائی جاتی ہے کیونکہ وہ میرؔ کے بہت بڑے قدردان تھے ۔پی ٹی وی کے ابتدائی دنوں میں انتظار حسین نے ناصرؔ کاظمی کا ایک یادگار انٹرویو کیا تھا ،اس انٹرویو میں ناصرؔ نے میر کے فن پر خاصی سیر حاصل گفتگو کی تھی۔افسوس مشاہیر کے یہ انٹرویو پی ٹی وی کی غفلت کا شکار ہو گئے ورنہ کیسی کیسی نابغہ روزگار ادبی شخصیات کے انٹرویوز پیش کیا جاتے تھے۔ جن دنوں ناصر ؔ ریڈیو پاکستان میں اسٹاف ایڈیٹر کے فرائض انجام دے رہے تھے تو بہت کم لوگ یہ جانتے ہیں کہ انہوں نے کچھ مغربی شاعروں کی شاعری کا ترجمہ بھی کیا تھا اور اُس کتاب کا نام ’’بروکلن گھاٹ کے پار‘‘ تھا۔افسوس اب یہ مجموعہ دستیاب نھیں ہے ۔ مجموعہ ہاے کلام : برگِ نے (۱۹۵۲ء) ۔ دیوان ( ۱۹۷۲ء ) ۔ پہلی بارش ( ۱۹۷۵ء) ۔ نشاطِ خواب ( ۱۹۷۷ء ) ۔ سُر کی چھایا ( منظوم تمثیل ،۱۹۸۱ء) ۔ خُشک چشمے کے کنارے (۱۹۸۲ء) ۔ ناصر کاظمی کی ڈائری (۱۹۹۵ء)۔ انتخابِ میرؔ ( ۱۹۸۹ء) ۔ انتخابِ نظیرؔ ( ۱۹۹۰ء) ۔ انتخابِ ولی دکھنی (۱۹۹۱ء) ۔ انتخابِ انشأ (۱۹۹۱ء) وغیرہ وغیرہ ! یہ بات دل چسپی سے خالی نھیں کہ ناصرؔ کی زیادہ تر تصانیف اُن کے انتقال کے بعد شایع کی گئیں اور دنیا بھر میں موجود ان کے مداحوں نے اُن کے تحقیقی کام کو شایع کروایا ۔ نمونہ کلام : غزل نیتِ شوق بھر نہ جائے کہیں تو بھی دل سے اُتر نہ جائے کہیں آج دیکھا ہے تجھ کو دیر کے بعد آج کا دن گزر نہ جائے کہیں نہ ملا کر اداس لوگوں سے حسن تیرا بکھر نہ جائے کہیں آرزو ہے کہ تُو یہاں آئے اور پھر عمر بھر نہ جائے کہیں جی جلاتا ہوں اور یہ سوچتا ہوں رائگاں یہ ہُنر نہ جائے کہیں آؤ کچھ دیر رو ہی لیں ناصرؔ پھر یہ دریا اُتر نہ جائے کہیں

Shair Collection

اشعار کا مجموعہ

Compilation of top 20 hand-picked Urdu shayari on the most sought-after subjects and poets

انتہائی مطلوب مضامین اور شاعروں پر مشتمل 20 ہاتھ سے منتخب اردو شاعری کی تالیف

SEE FULL COLLECTIONمکمل کلیکشن دیکھیں
Pinterest Share