Word of the dayآج کا لفظ

Martello

کنج انزدا

MEANS: ملک کی حفاظت کے لئے ساحلی قلعہ بندی

معنی: گوشہِ تنہائی

Listen to Urdu Pronunciationالفاظ کے تلفظ سنئیے

Couplet of the day

آج کا شعر

Click on the below image to open up the complete image gallery. مکمل گیلری کو دیکھنے کے لئے نیچے دی گئی تصویر پر کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia

اردو انسائیکلوپیڈیا

جمیل الدین عالی

Description

تفصیل

مرزا جمیل الدین احمد خان نام، معروف پاکستانی شاعر،اُردو شاعری میں ’’دوہا نگاری‘‘ کے علم بردار ،کالم نگار ، صحافی ، انجمن ترقی اردو کے روح رواں ۔26 جنوری 1926ء کو دہلی(انڈیا) میں پیدا ہوئے۔بقیدِ حیات ہیں (اگست۲۰۱۲ء)۔والد: سر امیر الدین احمد خان (مرزا غالبؔ کے خانوادے سے تعلق) ، والدہ :سیّدہ جمیلہ بیگم(خواجہ میر دردؔ کے خانوادے سے تعلق) جمیل الدین عالی ؔ ایک بیوروکریٹ کی حیثیت سے بھی متعارف ہیں اور سی ایس ایس کا امتحان پاس کرکے پاکستان ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سروسز کے لیے بھی منتخب ہوئے۔شاعری آپ کی شخصیت میں رچی بسی رہی،ملازمت کے ساتھ ساتھ آپ ’’قومی اور مِلّی نغموں‘‘ کو بھی تیار کرتے رہے ۔1965ء کے پاک بھارت معرکہ میں آپ کے تحریر کردہ مِلّی نغموں نے پاک فوجی جوانوں میں آزادی اور حُب الوطنی کی نئی رُوح پھونک دی ۔اس موقع پر ملک کے نام ور گلوکاروں نے آپ کی تخلیقات کو اپنی آوازوں سے مزید نکھار بخشا مثلاً ملکۂ ترنم نُور جہاں ، مہدی حسن ،صبیحہ خانم ،نسیم بیگم ، مہدی ظہیر،شہناز بیگم ، فریدہ خانم ، ناہید اختر، نیرہ نُور، علن فقیر و دیگر نام ور گلوکار شامل ہیں۔قیامِ پاکستان کے بعد عالی جی وزارتِ تجارت (حکومتِ پاکستان ) سے منسلک ہوئے ، بعد ازاں ۵۰ء کی دہائی میں ’’انکم ٹیکس آفیسر ‘‘ مقرر ہوئے ۔ ۶۰ء کی دہائی میں وزارتِ تعلیم میں کاپی رائٹ کی خدمات سر انجام دیں وہاں سے نیشنل پریس ٹرانسفر ہوا۔ ۶۰ء کی دہائی کے آخر میں ’’نیشنل بینک اوف پاکستان ‘‘ سے وابستہ ہوئے اور وہاں سے ترقی پاکر پاکستان بینکنگ کونسل میں ’’ایڈوائزر‘‘ مقرر ہوئے۔ عالیؔ جی ہمہ گیر شخصیت کے حامل ہیں۔شاعر اور صحافی کی حیثیت سے اپنے آپ کو منوایا ۔دوہے بھی کہے اور تحقیق بھی کی۔مرزا غالب ، امیر خسرو پر تحقیقی کام کے ساتھ ساتھ اکبرِ اعظم کے دور میں لکھے جانے والے دوہوں پر بھی تحقیق کی۔آپ کا ایک شاعرانہ وصف تحت اللفظ کے ساتھ ساتھ ترنم سے بھی دوہے پڑھنا ہے ۔اگر یہ لکھوں کہ عالیؔ جی نے ’’اردو دوہے ‘‘کی بازیافت کی ہے ، تو مُبالغہ نہ ہوگا ۔ جمیل الدین عالی ؔ کا ایک شاعرانہ وصف اُن کے مِلّی نغمے ہیں ۔آپ نے پچیس کے قریب معروف ترین قومی گیت تحریر کیے ، جن میں سے چند خاص درج ذیل ہیں: * جُگ جُگ جیے میرا پیارا وطن * جیوے جیوے جیوے پاکستان *اے وطن کے سجیلے جوانو ! * اللہ کے وعدے پہ مجاہد کو یقیں ہے * سوہنی دھرتی اللہ رکھے ، قدم قدم آباد تجھے * ہم مصطفوی مصطفوی مصطفوی ہیں ۔۔۔ * میں چھوٹا سا اک لڑکا ہوں پر کام کروں گا بڑے بڑے *اب یہ اندازِ انجمن ہوگا ۔۔۔۔ *ہم مائیں ، ہم بہنیں ، ہم بیٹیاں ۔۔۔ * جو نام وہی پہچان ، پاکستان ، پاکستان * اتنے بڑے جیون ساگر میں تُو نے پاکستان دیا ، ہو اللہ ہو اللہ ! وغیرہ وغیرہ ! جناب جمیل الدین عالیؔ کو 1989 ء میں صدارتی تمغہ برائے حُسنِ کارکردگی سے نوازا گیا۔ نمونہ کلام : ’’اے وطن کے سجیلے جوانو۔۔۔‘‘( مورخہ : ۸ ؍ ستمبر ۱۹۶۵ء) اے وطن کے سجیلے جوانو میرے نغمے تمہارے لیے ہیں سرفروشی ہے ایماں تمہارا ، جراتوں کے پرستار ہو تم جو حفاظت کرے سرحدوں کی ، وہ فلک بوس دیوار ہو تم اے شجاعت کے زندہ نشانوں میرے نغمے تمہارے لیے ہیں بیویوں ، ماؤں ، بہنوں کی نظریں تم کو دیکھیں تو یوں جگمگائیں جیسے خاموشیوں کی زباں سے دے رہی ہوں وہ تم کو دعائیں قوم کے اے جری پاسبانو میرے نغمے تہمارے لیے ہیں تم پہ جو کچھ لکھا شاعروں نے اس میں شامل ہے آواز میری اُڑ کے پہنچو گے تم جس افق پر ساتھ جائے گی پرواز میری چاند تاروں کے اے رازدانوں میرے نغمے تمہارے لیے ہیں میرے نغمے تمہارے لیے ہیں دیگرتصانیف : اے میرے دشتِ سخن ۔ غزلیں ، دوہے، گیت ۔ جیوے جیوے پاکستان ۔ لا حاصل ۔ نئی کرن ۔ انسان (طویل نظمیہ) ۔ دیو ناگری دوہے ۔ دُنیا میرے آگے (سفرنامہ) ۔ تماشا میرے آگے (سفرنامہ) ۔ آئس لینڈ ( سفرنامہ) ۔ حرفے (چار جلدیں ) ۔ دعا کرچلے (کالموں کا انتخاب) ۔ صدا کر چلے(کالموں کا انتخاب ) و دیگر جمیل الدین عالی کو قارئین کی پسندیدگی کے اعزازات کے علاوہ بھی ’’ ستارۂ امتیاز ‘‘(۲۰۰۴ء) ، پرائڈ اوف پرفارمنس ‘‘(۱۹۸۹ء) ، ’’آدم جی ادبی ایوارڈ ‘‘(۱۹۶۰ء) ، ’’داؤد ادبی ایوارڈ ‘‘(۱۹۶۳ء) ، یو بی ایل لٹریری ایوارڈ ‘‘(۱۹۶۵ء) ، ’’ حبیب بینک ادبی انعام ‘‘(۱۹۶۵ء) ، ’’اردو اکادمی کناڈا ایوارڈ ‘‘(۱۹۸۸ء) اور ’’ سنت کبیر ایوارڈ ‘‘ دہلی (۱۹۸۹ء) بھی مل چکے ہیں۔

Shair Collection

اشعار کا مجموعہ

Compilation of top 20 hand-picked Urdu shayari on the most sought-after subjects and poets

انتہائی مطلوب مضامین اور شاعروں پر مشتمل 20 ہاتھ سے منتخب اردو شاعری کی تالیف

SEE FULL COLLECTIONمکمل کلیکشن دیکھیں
Pinterest Share