Word of the dayآج کا لفظ

Martello

کنج انزدا

MEANS: ملک کی حفاظت کے لئے ساحلی قلعہ بندی

معنی: گوشہِ تنہائی

Listen to Urdu Pronunciationالفاظ کے تلفظ سنئیے

Couplet of the day

آج کا شعر

Click on the below image to open up the complete image gallery. مکمل گیلری کو دیکھنے کے لئے نیچے دی گئی تصویر پر کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia

اردو انسائیکلوپیڈیا

شاہ عبد اللطیف بھٹائی

Description

تفصیل

سندھی زبان کے بر صغیر کے عظیم شاعر ،آپ نے اپنی شاعری کے ذریعہ اللہ اور اس کے رسولؐ کے پیغام کو لوگوں تک پہنچایا۔شاہ عبد اللطیف ؒ کی ولادت 18 ؍ نومبر 1689 ء میں ’’ہالا حویلی ‘‘میں ہوئی جہاں آپ کے آباؤاجداد مغل بادشاہ اورنگ زیب عالمگیر کے دور میں برصغیر میں ہجرت کرکے آئے تھے۔سید حبیب شاہ آپ کے والد کا نام تھا۔یکے بعد دیگرے تین شادیوں کے بعد ایک بزرگ کی دعا سے اللہ تعالٰی نے سید حبیب شاہ کو اولاد نرینہ (عبداللطیف) سے نوازا اور اُنہی بزرگ کے کہنے پر آپ کا نام ’’ عبد اللطیف‘‘ رکھا گیا ۔بہت نوعمری ہی میں شاہ عبد اللطیف تصوف کی طرف راغب ہوئے اور اللہ کے کارناموں پر غور کرنا شروع کردیا۔تقریباً اٹھارہ سال کی عمر میں آپ کی شادی ایک اعلا خاندان کی خاتون سے ہوئی اور ایک خوش باش زندگی گذارتے گذارتے اچانک آپ کے خیالات میں تبدیلی آئی اور آپ گھر سے نزدیک ایک ٹیلے پر رہائش پذیر ہوگئے۔سندھی زبان میں ٹِیلے کو ’’ بھِٹ ‘‘ کہا جاتا ہے ،اسی نسبت سے آپ ’’ بھٹائی‘‘ کہلائے۔شاہ بھٹائی اس ٹیلے پر اپنی زندگی بسر کرتے رہے اور اللہ کی عبادت کرتے رہے۔ٹیلے کے نزدیک ایک نہر بھی بہتی تھی،کمالِ فن دیکھئے کہ شاہ عبد اللطیف بھٹائی نے اُس کے پانی کا شور یا آوازیں سُن کر موسیقی کے سُر دریافت کیے اور ایک آلہ موسیقی ایجاد کیا جسے ’’ طنبور‘‘ یا ’’ طنبورا‘‘ کہا جاتا ہے۔شاہ عبد اللطیف بھٹائی ؒ نے اپنی شاعری میں دُنیا بھر کا روحانی فلسفہ سمودیا۔آپ کی شاعری کو ’’ شاہ سائیں جو رسالو‘‘ کے عنوان سے یکجا کیا گیا ۔ آپ کی شاعری میں جو موسیقیت ہے اس سے انکار نھیں کیا جاسکتا۔آپ کا پیغام عالمی پیغام ہے۔آپ یکم جنوری 1752 ء میں اس جہانِ فانی سے رخصت ہوگئے اور معروف بادشاہ غلام شاہ کلہوڑو نے آپ کا مزار تعمیر کروایا۔آج کل یہ علاقہ ’’ بھٹ شاہ‘‘ کہلاتا ہے جہاں ہر سال ماہ صفر کی ۱۴ تاریخ کو آپ کا عرس منایا جاتا ہے ۔فی زمانہ پروفیسر عابدہ پروین نے اپنی آواز میں آپ کا کلام گایا ہے اور اس کی روحانیت کا حق ادا کردیا ہے۔اُردو زبان میں سب سے پہلے ’’شاہ جو رسالو‘‘ کا ترجمہ معروف شاعر شیخ ایاز نے کیا تاہم ان کی معاونت پروفیسر آفاق صدیقی نے کی۔ بہترین نمونہ کلام : ’’ سُر مارئی ‘‘ جو شاہ صاحب کی شاعری کا تیسرا بنیادی سُر ہے۔

Shair Collection

اشعار کا مجموعہ

Compilation of top 20 hand-picked Urdu shayari on the most sought-after subjects and poets

انتہائی مطلوب مضامین اور شاعروں پر مشتمل 20 ہاتھ سے منتخب اردو شاعری کی تالیف

SEE FULL COLLECTIONمکمل کلیکشن دیکھیں
Pinterest Share