Word of the dayآج کا لفظ

Martello

کنج انزدا

MEANS: ملک کی حفاظت کے لئے ساحلی قلعہ بندی

معنی: گوشہِ تنہائی

Listen to Urdu Pronunciationالفاظ کے تلفظ سنئیے

Couplet of the day

آج کا شعر

Click on the below image to open up the complete image gallery. مکمل گیلری کو دیکھنے کے لئے نیچے دی گئی تصویر پر کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia

اردو انسائیکلوپیڈیا

Crow کَوّا

English NameCrow
Group of AnimalBird
Pluralکوّے
Male جی ہاں
Femaleکوّی
Baby Animal's Nameچُوزہ
Sound کائیں کائیں
No Urdu Nameزاغ، کاگا ، کاگ
Imagehttp://www.flickr.com/photos/jepoirrier/5577585893/

Description

تفصیل

کوّا گھونسلہ بنانے والے پرندوں کی نسل میں درمیانے قد کاٹھ کا پرندہ ہے جو Corvus سے تعلق رکھتا ہے اور اس کا سلسلہ Corvidae خاندان سے جاکر ملتا ہے۔ اس کی جسامت کبوتر سے ذرا بڑی ہوتی ہے۔ پہاڑی کوّے (Eurasian and Daurian) ایتھوپیا کے شمالی پہاڑی علاقوں میں، پہاڑوں کی چوٹی میں مختلف کھوہ ڈھونڈ کر اپنا گھونسلہ بناتے ہیں۔ ان کی 40 سے زائد اقسام ہیں جو معتدل ماحول میں رہتی ہیں (سوائے جنوبی امریکا کے)۔ وسطی ایشیا میں کوّے بتدریج پہنچے۔ شمالی اور جنوبی امریکا میں کوّا علم اللسانیات اور ذہانت کا نشان سمجھا جاتا ہے۔ روایات کے مطابق انسان نے مُردوں کو دفن کرنے کا طریقہ کوّے سے سیکھا۔ اس کے علاوہ آواز کے زیروبم کے ذریعہ پیغام رسانی کا طریقہ کار حضرت انسان نے کوّے سے سیکھا ہے۔ گویا کوّا انسان کا معلّمِ اول ہے یا اس کو قدیم ترین معلّم بھی کہہ سکتے ہیں۔ ہندوستانی ثقافت میں کوّے کا کسی کے گھر کی منڈیر پر بیٹھنا مہمان کی آمد کی علامت سمجھا جاتا ہے اور اگر کسی شخص کے گھر کی منڈیر پر بیک وقت دو کوّے دکھائی دیں تو اُسے خوش بختی کی علامت قرار دیا جاتا ہے۔ کوّے کی اوسط عمر 200 سال بتائی جاتی ہے۔ دنیا میں پھیلے ہوئے ان گنت سمندری جزائر جس میں جزیرہ ہوائی اور کینیڈا کا علاقہ بھی شامل ہے‘ زمانہ قدیم سے کوے کی آماجگاہیں بنے رہے ہیں۔ برصغیر میں آنے والے کوّوں کی کھیپ آسٹریلیا سے پہنچی۔ تحقیق کے مطابق بیک وقت تمام کوّوں نے آسٹریلیا سے ہجرت کرکے مشرق بعید اور جنوبی ایشیا کو اپنا مرکز بنایا لیکن کچھ عرصے بعد ان میں سے کچھ اقسام دوبارہ آسٹریلیا چلی گئیں۔ بنیادی طور پر کوّوں کو ان کے رنگ کی نسبت سے دو قبیلوں میں تقسیم کیا گیا ہے جس میں ایک قبیلہ مکمل کالے رنگ کا ہے۔ اسے برصغیر میں پہاڑی کوّا کہا جاتا ہے اور اس کی وجہ یہ ہے کہ اس کا آبائی علاقہ حبشہ (ایتھوپیا) کا پہاڑی سلسلہ ہے‘ جن کی چوٹیوں پر اس کا بسیرا ہوا کرتا تھا اور وہاں سے یہ کوّے امریکہ اور یورپ پہنچے۔ آسٹریلیا کی وہ نسل جو برصغیر پہنچی اس کے بازو‘ پشت اور چہرہ کالا جبکہ گردن اور سینہ سرمئی رنگ کا ہوتا ہے۔ کوّا انتہائی چالاک اور سمجھ دار پرندہ ہے۔ ان کا آپس میں ایکا بھی بہت مشہور ہے کیونکہ جب یہ کسی کی دشمنی پر اتر آئیں یا ان پر کوئی مصیبت پڑ جائے تو اطراف کے تمام کوّے ایک جگہ جمع ہوکر اپنے دشمن کے خلاف صف آرا ہوجاتے ہیں اور اس قدر غُل مچاتے ہیں کہ کان پڑی آواز سنائی نہیں دیتی۔ پہاڑی کوّے کو امریکہ اور یورپ میں راون Raven بھی کہا جاتا ہے۔ کوّے ہر قسم کی اجناس‘ پھل اور گوشت وغیرہ کھا کر گزارہ کرتے ہیں۔ چھوٹے پرندوں کے انڈے اور بچے چرا کر کھانے میں انہیں ملکہ حاصل ہے۔ مردار مل جائے تو ان کوّوں کی دعوتِ شیراز ہوجاتی ہے اور کچھ بھی نہ ملے تو گندگی کھانے سے بھی گریز نہیں کرتے۔ اردو زبان میں کوّے سے متعلق بہت ساری اصطلاحات اور کہاوتیں وغیرہ رائج ہیں۔ جن میں سے بعض زبانِ زدِ عام ہیں۔ مثلاً ’’کوے کی طرح چالاک ہونا‘‘ ’’کوا چلا ہنس کی چال اپنی چال بھی بھول گیا‘‘ ’’کالا کّوا‘‘ وغیرہ وغیرہ۔ روایات کے مطابق کوّا عموماً انگور نہیں کھاتا اور اگر کھائے تو اسے حیرت انگیر واقعہ یا عجوبہ قرار دیا جاتا ہے۔ بقول داغ دہلوی کے ’’زاغ کی چونچ میں انگور خدا کی قدرت‘‘ ہندوستانی کلاسیکل ادب میں کوّے کی کہانی سب سے قدیم‘ مستند اور روایتی کہانی تصور کی جاتی ہے جس میں اس کی عقل مندی کے ذریعے پیاس بجھانے کا طریقہ کار بیان کیا گیا ہے۔ تاریخی اسناد کے مطابق صحرائی علاقوں کا فاصلہ ناپنے کے لئے جو اکائی مقرر تھی وہ کوّے کی اُڑان کہلاتی ہے جس کے ذریعے کسی صحرا کا فاصلہ ماپا جاتا تھا۔

Shair Collection

اشعار کا مجموعہ

Compilation of top 20 hand-picked Urdu shayari on the most sought-after subjects and poets

انتہائی مطلوب مضامین اور شاعروں پر مشتمل 20 ہاتھ سے منتخب اردو شاعری کی تالیف

SEE FULL COLLECTIONمکمل کلیکشن دیکھیں
Pinterest Share