• آزردہ ہونٹ تک نہ ہلے اس کے رو برو
    مانا کہ آپ سا کوئی جادو بیاں نہیں
    آزردہ
  • دپٹہ سہاوے جیو سہماے
    ہونٹ سلونیں من لبھائے
    نو سرہار
  • کب ہو جلاد فلک مین اس گھڑ بارائے نطق
    ہونٹ لاگے چاٹنے لکنت کرے منہ میں زباں
    سودا
  • خلط کی خوبی، ہونٹ توڑ لیا
    جسے چاہا اسے بھنبھوڑ لیا
    انشا
  • میں تو چپ ہوں وہ ہونٹ چاٹے ہے
    کیا کہوں ریجھنے کی جا ہے یہ
    میر
  • وہ عجیب پھول سے لفظ تھے، ترے ہونٹ جن سے مہک اٹھے
    مرے دشتِ خواب میں دور تک، کوئی باغ جیے لگا گئے
    امجد اسلام امجد
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter