• آنسو کو کبھی اوس کا قطرہ نہ سمجھنا
    ایسا تمہیں چاہت کا سمندر نہ ملے گا
    بشیر بدر
  • غرق دریائے خجالت ہوگئے چاہت سے ہم
    آبرو جتنی بہم پہنچائی تھی پانی ہوگئی
    رشک
  • چل گیا ادنیٰ سے زیور کی ڈلک کا جادو
    جانے کیا سمجھا تھا چاہت کو مری جان تونے
    ابن انشا
  • اس کی چاہت کی چاندنی ہوگی
    خوب صورت سی زندگی ہوگی
    بشیر بدر
  • نام اُلفت کا نہ لوں گا جب تلک ہے دم میں دم
    تو نے چاہت کا مزا اے فتنہ گر دکھلادیا
    مومن
  • آنکھ چاہت کی ظفر کوئی بھلا چھپتی ہے
    اس سے شرماتے تھے ہم‘ ہم سے وہ شرماتا تھا
    بہار شاہ ظفر
First Previous
1 2 3 4
Next Last
Page 1 of 4

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter