• صحرا میں کیا دھرا ہے‘ ابھی شہر کو نہ چھوڑ
    کچھ روز دوستوں کی وفا اور دیکھ لے
    شہزاد ‌احمد
  • چُھپانا بھلا راز توں غیر تے
    نہ دیکھیا وفا کوئی اس دَہر تے
    غواصی
  • عشق میں تو اگر وفا نہ کرے
    میں بھی جان اپنی کھو نہیں سکتا
    دل عظیم آبادی
  • کیا کہئے داغ دل ہے ٹکڑے جگر ہے سارا
    جانے وہی جو کوئی ظالم وفا کرے ہے
    میر تقی میر
  • سُرخی بنے تو خُونِ شہیداں کا رنگ تھے
    روشن ہُوئے تو مشعلِ راہِ وفا رہے
    امجد اسلام امجد
  • تو بے وفا نہیں ہے مگر بے وفائی کر
    اس کی نطر میں رہنے کا کچھ سلسلہ بھی ہو
    بشیر بدر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 43

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter