• بند کرلیں مری جانب سے کچھ ایسی آنکھیں
    کوئی خط بھی نہ کبھی اہل وطن کا آیا
    مصحفی
  • لالہ سو لال میرا لالی لگا گیا رے
    کوئی منج خبر کرو رے اوس کا وطن کہاں ہے
    حسن شوقی
  • وطن اور اس کی روایات پہ جس سے حرف آئے
    باعث ننگ ہے وہ شیوہ فریاد مجھے
    ظفر علی خاں
  • کیا رہوں غربت میں خوش، جب ہو حوادث کا یہ حال
    نامہ لاتا ہے وطن سے نامہ بر اکثر کھلا
    غالب
  • جنوں کے جوش سے بیگانہ وار ہیں احباب
    ہمارا حال وطن میں ہوا سفر کا سا
    مومن
  • تلوے مرے کھجلاتے ہیں کرتا ہوں سفر میں
    ہے ناک میں دم ہاتھ سے یاران وطن کے
    فیض
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 11

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter