• وطن اور اس کی روایات پہ جس سے حرف آئے
    باعث ننگ ہے وہ شیوہ فریاد مجھے
    ظفر علی خاں
  • ممبئی تک ترے مشتاق چلے آئے ہیں
    تیرے دیرینہ رفیقان وطن تیرے لیے!
    اختر شیرانی
  • آخر چمن سے نگہت گل کر گئی سفر
    خانہ بدوش کو نہیں الفت وطن کے ساتھ
    ذوق
  • بند کرلیں مری جانب سے کچھ ایسی آنکھیں
    کوئی خط بھی نہ کبھی اہل وطن کا آیا
    مصحفی
  • تری یہ زلف ہے شام غریباں
    جبیں تیری مجھے صبح وطن ہے
    ولی
  • مجمع اہل وطن سے کوئی بیروں نہ کرے
    آسماں صحبت احباب دگر گوں نہ کرے
    بیخقد (ہادی علی)
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 11

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter