• عین محبت میں ہیں مِلاتے باہم جب دو چار آنکھیں
    ہوتی ہیں باہم مہر و وفا سے دو آنکھوں کی چار آنکھیں
    ظفر
  • اک بار نگاہیں تو ملا لے کہ مجھے بھی
    شاید تری آنکھوں میں محبت نظر آجائے
    سرور ‌بارہ ‌بنکوی
  • بتاں کی محبت نے مجھ کو ستایا
    ہو تلپٹ خدا بیج ہی دوستی کا
    اظفری
  • توہی میری محبت سے نہیں بے زار اے ظالم
    جسے چاہا ہوا دشمن، مجھے اس باب کا جَس ہے
    حسرت (جعفر علی)
  • آکہ بازار محبت میں اٹھا لی ہم نے
    جنس رد کردہ بازار وفا جس کو کہیں
    فکر جمیل
  • گھل گھل کے مرچلا ہوں محبت کے روگ میں
    ڈالا ہے تیرے غم نے مجھے اس بروگ میں
    فیض
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 71

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter