• ہے عشق ایک روگ، محبت عذاب ہے
    اک روز یہ خراب کریں گے، کہانہ تھا!
    امجد اسلام امجد
  • ہے کیمیا گرانِ محبت میں قدر خاک
    پر وقر کچھ نہیں ہے دل بے گداز کا
    میر تقی میر
  • دل سنگ جائے نہ جب تک اور بھڑک اٹھے نہ جاں
    کم نہ ہو قلیاں کشِ سوزِ محبت کی طلب
    ذوق
  • پھر ہار کا اور جیت کا اندیشہ نہ رکھّے
    جی داؤ محبت میں جب انسان لگادے
    محصفی
  • ہمیشہ بیٹھے اٹھتے ہمیں اذیت دی
    ہمیں خدا نے محبت تجھے عداوت دی
    الماس درخشاں
  • نبضِ دل ڈوبتی جاتی ہے‘ طبیعت ہے نڈھال
    مجھ سے پھر دردِ محبت نے کوئی کام لیا
    ماہر ‌القادری
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 71

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter