• ہے نیند ماں اجڑی کے نت چونک پڑتی غم سیں ہوں
    تو سب کتیاں جھڑپن ہوا چونکے پہ ہور بچکاٹ پر
    ہاشمی
  • ماں باپ سے پسر کو چھڑائے نہ کردگار
    زخم سنان و تیغ گوارا یہ ناگوار
    انیس
  • سو پُر پیچ زلفاں سرنگ گال پر
    کنڈال گھال ناگاں بیٹھے ماں پر
    حسن شوقی
  • سو ماں باپ کوں شہ دلاسا دے کر
    چلیا اپنے معشوق کے شہر ادھر
    قطب مشتری
  • رحمی ماں کی جب تھا غلولا
    رزق کیونکر دبیا جب تھا ابولا
    ولایت نامہ
  • کہنا تھا پہلے سے گویا خشک ہوکر ماں کا دودھ
    دل ہٹا لو اب خدارا اصغرِ بے شیر سے
    آرزو لکھنوی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 14

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter