• جہاں لگ ہے بد فعل عورت چھتال
    رہے نا جتا کچ رکھیں اوس سنبھال
    غواصی
  • وو ہلکا شور و شر کرکے جھڑک جھٹ مٹ کریں جھگڑا
    بچکنا چلبچل ہونا چنچل عورت کے جھگڑے پر
    ہاشمی
  • نہیں مانے گی یہ جھگڑالو عورت ہے
    فساد کی جڑ ہے یہ چڑالو عورت ہے
    دلاور
  • نہ عورت اسے کوئی چھڑا چھانٹ ہے
    تجے ہور اسے اے سکی گانٹ ہے
    غواصی
  • نظر دورتے ایک عورت پہ پڑی
    چادر اوڑ سر پاؤں لک آکھڑی
    کبیر
  • دلدل جو ہو رہی ہے ہر اک جا پہ رسمسی
    مر مر اٹھا ہے مرد تو عورت رہی پھنسی
    نظیر
First Previous
1 2 3 4 5
Next Last
Page 1 of 5

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter