• عشق کے رمز سوں نہیں آگاہ
    کیا ہوا توں کیا کتاباں جمع
    ولی
  • بارے یہ داغ عشق ہواشہر یارِ دل
    مدت سے بے چراغ پڑا تھا دیارِ دل
    درد
  • کیا قدر و منزلت تری دیوان عشق میں
    دفتر میں جب کہ نام نہ عارف ترا چڑھے
    عارف
  • حالت دل کا بیاں کرتا کسی سے میں تو کیا
    عشق میں اک مصحف رخسار کے سیپارہ تھا
    آتش
  • منجے عشق دیتا ہے یوں آگہی
    کہ ہے اودلارام میری سہی
    غواصی
  • کرو نہ ضیق میں دم اپنے عشق بازوں کا
    مسیح ہوکے مریضوں کو دق کیا نہ کرو
    شرف
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 163

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter