• اس چرخ سیہ رونے اک فتنے کو سنکارا
    اس ظلم رسیدہ کو کن سختیوں سے مارا
    میر
  • واں جہاں خاک کے برابر ہے
    قدر ہفت آسمانِ ظلم شعار
    میر تقی میر
  • کیا سکھائے گا ان کو ظلم فلک
    خود وہ سیکھے سکھائے بیٹھے ہیں
    انور دہلوی
  • اُس ظلم پیشہ کی یہ رسم قدیم ہے گی
    غیروں پہ مہربانی یاروں سے کینہ جوئی
    میر تقی میر
  • یہ ظلم بے نہایت دیکھو تو خوبر ویاں!
    کہتے ہیں جو ستم ہے ہم تجھ ہی پر کریں گے
    میر تقی میر
  • صبرِ دلِ حسین کو اب دیکھئے بغور
    وہ بے کسی وہ غم وہ مصیبت وہ ظلم و جور
    مونس
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter