• ظلم ڈھاتے تو ہیں اپنے آرزو مندوں پہ آپ
    اور جو ہم چھوڑ بیٹھے آرزو مندی کہیں!
    فضل ‌احمد ‌کریم ‌فضلی
  • خاموش میر شمع رسالت کی بجھ گئی
    باد شمال ظلم نے کی صبح ترکتاز
    میر
  • کرتی ہیں ہر شام یہ بِنتی ،آنکھیں ریت بھری
    روشن ہو اے امن کے تارے ، ظلم کے سورج، ڈھل
    امجداسلام امجد
  • تکلّف ہر طرف نظارگی میں بھی سہی لیکن
    وہ دیکھا جائے، کب یہ ظلم دیکھا جائے ہے مجھ سے
    غالب
  • وصل کی شب یہ ظلم ہو کچھ تو سبب ہے سچ کہو
    رات رہے موذنو آج اذاں سے کیا غرض
    بے نظیر شاہ
  • بھول کر دل تجھے اب دیں گے نہ ہم اے سفاک
    رنج و غم جور و جفا ظلم و ستم یاد ہیں سب
    امانت
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter