• یہ کہہ کے جو رویا تو لگا کہنے نہ کہہ میر
    سُنتا نہیں میں ظلم رسیدوں کی کہانی
    میر تقی میر
  • کثرت ظلم و ستم سے ہوئے عابد نہ ملول
    وہ سمجھتے تھے اتر جائے گا چڑھتا پانی
    اعجاز نوح
  • آپ ہی ظلم کرو آپ ہی شکوہ الٹا
    سچ ہے صاحب روش الٹی ہے زمانہ الٹا
    دیوان اسیر
  • مثل مشہور ہے خالہ کا گھر نہیں ہے
    ستم ہے ظلم ہے جور و جفا ہے
    احمد گجراتی
  • ظلم اعداد نے کیا جب سے تمہیں گوشہ نشیں
    چاند سورج کو ہے گردوں پہ اسی دن سے گہن
    اسیر( مظفر علی)
  • ظلم کا لگا لگا کر آشیانوں کو نہ چھیڑ
    بلبلیں صیاد چپ ہیں بے زبانوں کو نہ چھیڑ
    دیوانجی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter