• مرا دل پاک ہے از بس ولی زنگ کدورت سوں
    ہوا جیوں جوہر آئینہ منفی پیچ و تاب اس کا
    ولی
  • ابھی تو دل میں ہے جو کچھ بیان کرنا ہے
    یہ بعد میں سہی کس بات سے مُکرنا ہے
    افتخار ‌نسیم
  • تم اک جزیرۂ دل میں سمٹ کے بیٹھ گئے
    مری نگاہ میں طوفانِ صد زمانہ رہا!
    مجید ‌امجد
  • اے گریہ پس قافلہ دل نام ہے اک یار
    یہ خستہ بھی نبھ جائے جو یکدم ہو توقف
    قائم
  • دردِ دل کے واسطے پیدا کیا انساں کو
    ورنہ طاعت کے لئے کچھ کم نہ تھے کروبیاں
    درد
  • دل ہی واقف ہے کچھ اسرار محبت سے محب
    ورنہ یہ بھید فلاطوں سے بتایا نہ گیا
    محب
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 740

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter