• دل عاشق میں کرے کیونکہ نہ آنسو سوراخ
    اس الماس سے جات اہے یہ بیندھا گوہر
    ذوق
  • رہتا نہیں تڑپنے سے ٹک ہاتھ کے تلے
    کیا جانوں میر دل کو مرے کا بلا ہوا
    میر تقی میر
  • نہ جمع خاطر مضطر نہ دل کو اطمینان
    یہ زندگی ہے کوئی یا کہ دم شماری ہے
    شاد عظیم آبادی
  • دل مست جام بیخودی اس انجمن میں کیوں نہ ہو
    جیوں موج لے ہے ہر ادا سافی سیمیں ساق میں
    ولی
  • کوئی میرے دل سے پوچھے، ترے تیر نیم کش کو
    یہ خلش کہاں سے ہوتی، جو جگر کے پار ہوتا
    غالب
  • ہنستا ہے دیکھ کر دل عاشق کی خستگی
    ظالم نہیں ہے تجھ سے ستمگار کا جواب
    انور دہلوی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 740

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter