• ہرآن توڑتا ہے مری آس بار بار
    اس درد وغم کو آہ میں کس سے کہوں پکار
    نظیر
  • کیا کہوں کیا طرحیں بدلیں چاہ نے آخر کو میر
    تھا گرہ جو درد چھاتی ہیں سو اب غم ہوگیا
    میر تقی میر
  • یہاں پہ سکہ اہلِ ریا نہیں چلتا
    کہ اہلِ درد نظر سے کلام کرتے ہیں
    امجد اسلام امجد
  • زمانہ جب تئیں ہے اس کے درد کے مارے
    رہیں گے خاک فشاں مرغِ خانگی سارے
    میر
  • سچ تو یہ ہے عشق ایک ایسا درد لطف انگیز ہے
    بے اس کے بالکل ہیچ ہے‘ گر ہو حیات جاوداں
    نقوش مانی
  • مو درد مند عشق کوں ہر گز دوا کدنا کیا
    گر پوچھے منج کیا کام ہوئے تج حسن کے رجحان کوں
    قلی قطب شاہ
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 65

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter