• بارش کی آواز سے امجد
    شہر کا چہرہ کِھل اٹھا ہے
    امجد اسلام امجد
  • آج بہت دن بعد سُنی ہے بارش کی آواز
    آج بہت دن بعد کسی منظر نے رستہ روکا ہے
    رِم جِھم کا ملبوس پہن کر یاد کسی کی آئی ہے
    آج بہت دن بعد اچانک آنکھ یونہی بھر آئی ہے
    امجد ‌اسلام ‌امجد
  • شاید کوئی خواہش روتی رہتی ہے
    میرے اندر بارش ہوتی رہتی ہے
    احمد ‌فراز
  • پھر وہی آنسوؤں کی بارش ہے
    پھر وہی دل کی خشک سالی ہے!
    امجداسلام امجد
  • میں اب کی فصل بارش میں بناتا اس کا پر نالا
    جو ہوتا بانس کا ٹونٹا الف چاک گریباں کا
    ظریف لکھنؤی
  • بارش لحد پہ اشکوں کی تھی دل فگار تھا
    گویا نزول رحمت پروردگار تھا
    عروج
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter