• مٹا سکی نہ انھیں روز و شب کی بارش بھی
    دلوں پہ نقش جو رنگِ حنا کے رکھے تھے
    امجد اسلام امجد
  • پشت خم یوں کردیا ہے سیل گریہ نے یہ خم
    جس طرح آسیب سے بارش کے ہو دیوار کج
    جسونت سنگھ پروانہ
  • پیڑوں کی طرح حُسن کی بارش میں نہا لوں
    بادل کی طرح جھوم کے گھر آؤں کسی دن
    امجد ‌اسلام ‌امجد
  • پھلوں کی باغ بانی میں تو بارش کی دعا ہوگی
    گزرتے خوب صورت بادلوں کو کون دیکھے گا
    بشیر بدر
  • بارش کی دعاؤں میں نمی آنکھ کی مل جائے
    جذبے کی کبھی اتنی رفاقت بھی بہت تھی
    پروین ‌شاکر
  • اک ایسے ہجر کی آتش ہے میرے دل میں جسے
    کسی وصال کی بارش بجھا نہیں سکی
    امجد اسلام امجد
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter