• روتے روتے یوں دیدہ خود کام سفید
    جوشِ بارش سے ہوں جُون ابرِ سیہ فام سفید
    محب
  • شاید کوئی خواہش روتی رہتی ہے
    میرے اندر بارش ہوتی رہتی ہے
    احمد ‌فراز
  • جیسے بارش سے دھلے صحنِ گلستاں امجد
    آنکھ جب خشک ہوئی اور بھی چہرا چمکا
    امجد اسلام امجد
  • میں بھیگ بھیگ گیا آرزو کی بارش میں
    وہ عکس عکس میں تقسیم چشمِ ترسے ہُوا
    امجد اسلام امجد
  • چاروں طرف کمان کیانی کی وہ ترنگ
    رہ رہ کے ابر شام سے تھی بارش خدنگ
    انیس
  • جس تنہا سے پیڑ کے نیچے ہم بارش میں بھیگے تھے
    تم بھی اُس کو چھوکے گزرنا، میں بھی اُس سے لپٹوں گا
    امجد اسلام امجد
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter