• آج بہت دن بعد سُنی ہے بارش کی آواز
    آج بہت دن بعد کسی منظر نے رستہ روکا ہے
    رِم جِھم کا ملبوس پہن کر یاد کسی کی آئی ہے
    آج بہت دن بعد اچانک آنکھ یونہی بھر آئی ہے
    امجد ‌اسلام ‌امجد
  • بے موسم بارش کی صورت، دیر تلک اور دُور تلک
    تیرے دیارِ حُسن پہ میں بھی کِن مِن کِن مِن برسوں گا
    امجد اسلام امجد
  • اِک ایسے ہجر کی آتش ہے میرے دل میں جِسے
    کسی وصال کی بارش بُجھا نہیں سکتی
    امجد ‌اسلام ‌امجد
  • آگ کیا ہم کو لگائی ابر نے تیرے بغیر
    وقت بارش اخگر خورشید تف پر ڈالہ تھا
    مومن
  • ساری رات برسنے والی بارش کا میں آنچل ہوں
    دن میں کانٹوں پر پھیلا کو مجھ کو کھینچا جاتا ہے
    بشیر بدر
  • جس تنہا سے پیڑ کے نیچے ہم بارش میں بھیگے تھے
    تم بھی اُس کو چھوکے گزرنا، میں بھی اُس سے لپٹوں گا
    امجد اسلام امجد
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter