• معراج کے سفر میں ملائک تھے راست چپ
    افسوس میں غبار پس کارواں نہ تھا
    محامد خاتم النبین
  • آہ دست جنوں سے اے ناصح
    ہے گریبان تار تار افسوس
    نصیر دہلوی
  • افسوس اب کہاں وہ جوانی کہاں وہ دور
    پیتے تھے ہم بھی پیر مغاں خم کے خم کبھی
    الماس درخشاں
  • افسوس کچھ نہ میری رہائی کا ڈھب ہوا
    چھوٹا ادھر قفس سے ادھر میں طلب ہوا
    مظہر عشق
  • فتنہ برداز ، دغا باز ، فسوں گر ،عیار
    ہائے افسوس دل آیا بھی تو آیا کس پر
    گلزارِ داغ
  • وہ تم سے آج دورہے کل پاس آئے گا
    پھر سے خدا ملائے گا افسوس مت کرو
    بشیر بدر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 12

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter