• بلبل کی نمط نالۂ و زاری میں ہوں نس دن
    افسوس ووگل دے خوش باس نہ آیا
    ولی
  • افسوس کچھ نہ میری رہائی کا ڈھب ہوا
    چھوٹا ادھر قفس سے ادھر میں طلب ہوا
    مظہر عشق
  • اوٹہ (اٹھ) گیا بے کہے وہ یار افسوس
    جی کی جی میں رہی ہزار افسوس
    انتخاب رامپور
  • جب وہ دریا کے کنارے گئے مارے افسوس
    آپ صدمے سے ہوئے گور کنارے افسوس
    اوج لکھنوی
  • افسوس بے شمار سخن ہائے گفتنی
    خوف فساد خلق سے نا گفتہ رہ گئے
    معارف جمیل
  • افسوس وے شہید کہ جو قتل گاہ میں
    لگتے ہی اُس کے ہاتھ کی تلوار مرگئے
    میر تقی میر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 12

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter