• افسوس کوئی نیکی گرہ میں نہیں مری
    لنبے سفر کے واسطے زاد سفر نہیں
    ترانہ مسرت
  • دنیا میں اور چاہنے والے بھی ہیں بہت
    جوہونا تھا وہ ہوگیا افسوس مت کرو
    بشیر بدر
  • افسوس جنس دل کی نہ کچھ ہم نے قدر کی
    کرنا تھا مول چشم خریدار دیکھ کر
    داغ
  • نہ معرف نہ آشنا کوئی
    ہم ہیں بے یارو بے دیار افسوس
    میر
  • افسوس کے اشعار نے پکڑا ہے یہ رتبہ
    ہر طفل کے ہاتھوں میں ہیں دیوان کے ٹکڑے
    افسوس
  • بے کار جی پہ بوجھ لیے پھر رہے ہوتم
    دل ہے تمہارا پھول سا افسوس مت کرو
    بشیر بدر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 12

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter