• بچھوے پس کٹاری پس سناں ہیں تری آنکھیں
    کیا دست فروشی کی دکاں ہیں تری آنکھیں
    شعور
  • یہ مثل وہ ہے بدی آنکھ کی بھوں کے آگے
    مجھ سے کرتی ہیں شکایت تری اے یار آنکھیں
    بیخود(ہادی علی٩
  • آنکھیں لڑا لڑا کر کب تک لگا رکھیں گے
    اس پردے ہی میں خوباں ہم کو سلا رکھیں گے
    میر تقی میر
  • انتظار ماہوش میں تو نہ ہوں آنکھیں سفید
    شب یہ وہم آتا ہے سوئے چرخ خضرا دیکھ کر
    مومن
  • نرگس ہیں آنکھیں اور گل زنیق وہ ناک ہے
    رخسار دونوں گل ہیں گل یاسمین جبیں
    جبیں
  • فرقت میں دونوں آنکھیں ہیں جو میری اشکبار
    مردم کو زندگی ہے میانِ دوآب تلخ
    بیکود (ہادی علی)
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter