• تری آنکھیں چلتی ہوئی دیکھ لے
    نہ دیکھے ہوں جادو جو چلتے ہوئے
    جلال
  • اوس کی جب جوش سے مستی کے جھک آئیں آنکھیں
    شرم سے پھر نہ اٹھائیں جو کھکائیں آنکھیں
    میر حسن
  • اس کے عارض سے ہوا تھا جو دوچار آئنے میں
    رہتا ہے آنکھیں لگائے ہوئے یار آئنے میں
    رشک
  • زندگی ہوتی ہے اپنی غم کے مارے دیکھئے
    موند لیں آنکھیں ادھر سے تم نے پیارے دیکھئے
    میر تقی میر
  • گل ہی کی اور ہم بھی آنکھیں لگا رکھیں گے
    ایک آدھ دن جو موسم اب کی وفا کرے ہے
    میر تقی میر
  • کسرم جو غیر پر دیکھا لہو اتر آیا
    نہ پوچھ کیوں تری آنکھیں ہیں بن کے ناداں سرخ
    مومن
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter