• ابھی رو رو کے ٹک آنسو تھنبے ہیں میرے اے ہمدم
    نہ لا پھر پھر کے تو کچھ ذکر اور اذکار رونے کا
    میرحسن
  • یہ وہ آنسو ہیں جن سے زہرہ آتش ناک ہوجاوے
    اگر پیوے کوئی ان کو تو جل کر خاک ہوجاوے
    یقین
  • آبشار اشک کے کام آتے ہیں عریانی میں
    کہ اڑھادیتے ہیں اکثر مجھے چادر آنسو
    نسیم دہلوی
  • کچھ اس طرح دیکھا کسی بے وفا نے
    غضب ہوگئے چند آنسو چھپانے
    امجد اسلام امجد
  • بھر آئے آنکھ میں آنسو جو دیکھکر یہ حال
    کلیجھ تھام کے بس رہ گیا علی کا لال
    حیدرحسین
  • پھر صبر کس طرح ہو جو دل کو نہ کل پڑے
    پھیری جو انکھ شہ کے بھی آنسو نکل پڑے
    فائز
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 29

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter